قاہرہ: مصر میں پہلی بار عوامی ووٹوں سے منتخب ہونے والے صدر اور اخوان المسلمون یا مسلم برادرہڈ کے رہنما ڈاکٹر محمد مرسی،سابق فٹ بالر ابوتریکہ سمیت سینکڑوں اخوانیوں کو دہشتگرد قرار دے دیا گیا ہے۔

مصری حکومت کے تازہ سرکاری گزٹ میں 65 سالہ معزول منتخب صدر ڈاکٹر محمد مرسی اور سابق فٹ بالر ابو تریکہ سمیت اخوان المسلمین کے 532 ممبران دہشتگردوں کی لسٹ میں شامل کیا گیا ہے۔

یاد رہے کہ اخوان المسلمین نے 2013ء میں مرسی حکومت پر شب خون مارنے اور جمہوری حکومت کا تختہ الٹ کر فوج کے اقتدار پر قبضہ کرنے کے خلاف پرامن احتجاج کیا تھا۔ اس دوران موجودہ مصری آمر جنرل السیسی کے حکم پر فوج نے احتجاج ختم کرنے لیے ہزاروں معصوم مرد و خواتین کو موت کے گھاٹ اتار دیا تھا۔

مصر کے ساتھ سعودی عرب اور اس کے اتحادی عرب ممالک بھی اخوان المسلمون کو دہشتگرد تنظیم قرار دے چکے ہیں۔ جب کہ قطر اور کویت نے سعودی مطالبے کے باوجود تاحال ایسا نہیں کیا ہے۔

اخوان کے سیاسی ونگ فریڈم اینڈ جسٹس پارٹی کی جانب سے صدر منتخب ہونے کے بعد ایک برس بعد ہی جنرل عبدالفتاح السیسی کے ہاتھوں معزول ہونے والے محمد مرسی طویل عرصے سے جیل میں ہیں۔ ایک روز قبل ہی ان کے وکیل کا یہ بیان سامنے آیا تھا کہ جیل میں محمد مرسی کی زندگی طبی سہولیات نہ ملنے کی وجہ سے خطرے میں ہے۔

Subscribe for our email updates…

Email

Raah Tv Live

About Raah TV

Raah TV is a Pakistani infotainment web channel with a vision to promote positivity, optimism and hope.