حیاتِ محمد [صلی اللہ علیہ وسلم] 23 – منافقینِ مدینہ

غزوہ خندق کے بعد آپ صلی اللہ علیہ وسلم حضرت امّ سلمہ رضی اللہ عنہا کے گھر موجود تھے کہ حضرت جبریل تشریف لائے اور کہا کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے ہتھیار رکھ دئیے ہیں جبکہ فرشتوں نے ہتھیار نہیں رکھے ہیں ہم تو تیاری کر رہے ہیں بنو قریظہ کی طرف جانے کے لئے، یاد رہے کہ بنو قریظہ یہودیوں کا تیسرا قبیلہ تھا جنہوں نے غزوہ خندق کے موقع پر بد عہدی کی تھی اور کفار کا ساتھ دیا تھا چنانچہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے 3000 کے لشکر کے ہمراہ بنو قریظہ کا محاصرہ کر لیا۔ بنو قریظہ کے سردار کعب بن اسد کو مصالحت کا پیغام بھجوایا گیا لیکن وہ آمادہ جنگ تھے نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنے صحابہ سے مشورہ کیا تو انصار میں سے کچھ اصحاب نے احسان کا معاملہ کرنے کا مشورہ دیا۔ بعد میں اس پر سب کا اتفاق ہو گیا کہ جو فیصلہ حضرت سعد بن معاذ فرمائیں اس کو قبول کیا جائے گا۔ حضرت سعد بن معاذ نے حکم دیا کہ بنو قریظہ کے مردوں کو قتل کر دیا جائے جس کے نتیجے میں یہود کی بڑی تعداد قتل کر دی گئی۔ اور اس اقدام کے بعد یہود کی سازشوں سے مدینے کے لوگوں کو ہمیشہ کے لئے چھٹکارا مل گیا۔

دیکھئے سفر سیرت کا
مولانا کاشف شیخ کے ساتھ

حیاتِ محمد [صلی اللہ علیہ وسلم] 23 – منافقینِ مدینہ

Subscribe for our email updates…

Email

Raah Tv Live

About Raah TV

Raah TV is a Pakistani infotainment web channel with a vision to promote positivity, optimism and hope.