حیاتِ محمد [صلی اللہ علیہ وسلم] 21 – غزوہ احد

6 شوال سن 3 ہجری میں غزوہ احد پیش آیا، جس میں 700 صحابہ کرام رضوان اللہ تعالیٰ علیہم اجمعین شریک ہوئے۔ مقابل میں 3000 کفار شریک ہوئے جو 200 سے زائد گھوڑوں، اور اونٹوں پر سوار تھے۔ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے جبلِ احد اور جبلِ رماط کے درمیان کی جگہ کا انتخاب فرمایا تھا اور جبلِ رماط پر 50 تیرانداز کو متعین فرمایا جن کی قیادت عبداللہ بن جبیر کو سونپی گئی اور انہیں شہسواروں کو مسلمانوں سے دور رکھنے کا کہا گیا تا کہ وہ پشت سے حملہ نہ کر سکیں اور ہم لوگ جیتیں یا ہاریں تم نے اپنی جگہ نہیں چھوڑنی اگر تم دیکھو کہ ہم مالِ غنیمت سمیٹ رہے ہیں تو بھی تم اپنی جگہ سے نہ ہٹنا اور اگر تم دیکھو کہ ہم مارے جا رہے ہیں تو بھی اپنی جگہ نہیں چھوڑنا اور صحیح بخاری کی روایت ہے کہ حکم دیا گیا کہ اگر ہمیں پرندے بھی اچک رہے ہوں تو بھی تم اپنی جگہ پر ہی موجود رہنا اور جب تک کہ میں تمہیں نا بلاوں تم اپنی جگہ سے نہ ہلنا۔ جب مسلمان جنگ میں غالب آ گئے اور مسلمان مالِ غنیمت جمع کرنے لگے تو تیراندازوں کے دستے میں سے کچھ لوگ میدانِ جنگ کا رخ کرنے لگے۔ ان لوگوں کو عبداللہ بن جبیر نے روکا لیکن وہ لوگ نہیں رکے۔ اس کا نتیجہ یہ نکلا کہ خالد بن ولید جو اس وقت ایمان نہیں لائے تھے اور کفار کے قائد تھے انہوں نے ایک لمبا چکر لگا کر مسلمانوں کی پشت کی جانب سے حملہ کیا۔ 70 صحابہ کرام اس معرکے میں شہید ہوئے اور کفار کے 30 افراد جہنم واصل ہوئے۔
دیکھئے سفر سیرت کا
کاشف شیخ کے ساتھ

حیاتِ محمد [صلی اللہ علیہ وسلم] 21 – غزوہ احد

Subscribe for our email updates…

Email

Raah Tv Live

About Raah TV

Raah TV is a Pakistani infotainment web channel with a vision to promote positivity, optimism and hope.