استنبول:ترک صدر طیب اردوان نے امریکی انتظامیہ کے واضح انکار پر امن و امان سنبھالنے کی کوشش کے تحت کی گئی کارروائی پر اپنے محافظوں کے وارنٹ جاری ہونے پر امریکا کو کھری کھری سنا دیں۔

واشنگٹن میں موجود ترک ایمبیسی کے باہر ہونے والے ایک جھگڑے میں ترک صدر کے بارہ باڈی گارڈز کی گرفتاری کے وارنٹ ایشو ہونے پر طیب ادوان نے امریکی حکومت پر سخت تنقید کی ہے۔

مئی میں طیب اردوان کے امریکی دورے کے موقع پر واشنگٹن میں ترک ایمبیسی کے باہر ایک ہنگامے نے جنم لے لیا تھا واشنگٹن پولیس نے ہنگامہ میں ملوث افراد کے خلاف ایکشن لیتے ہوئے جمعرات کو بارہ باڈی گارڈز کے خلاف ایکشن لیا ہے۔

جمعرات کو انقرہ میں ایک افطار پارٹی میں گفتگو کرتے ہوئے طیب اردوان نے کہا کہ انھوں نے میرے بارہ باڈی گارڈ کے گرفتاری وارنٹ جاری کئے ہیں یہ کہاں کا قانون ہے؟

اردوان نے کہا کہ اگر میرے باڈی گارڈز بیرون ملک میری حفاظت نہیں کر سکتے تھے تو میں انھیں اپنے ساتھ امریکا کیوں لے کر گیا تھا۔

طیب اردوان نے کہا کہ امریکی پولیس نے کچھ نہیں کیا کیا آپ توقع کر سکتے ہیں کہ اگر اس قسم کا واقعہ ترکی میں ہوا ہوتا تو اس پر کیا ردعمل آنا تھا۔

یاد رہے کہ ترک صدر کے امریکی دورے پر فتح اللہ گولن کی تنظیم سے وابستہ افراد نے ایمبیسی سے کچھ ہی فاصلے پر طیب اردوان کے خلاف مظاہرہ کیا جس میں نوبت ہاتھا پائی تک جا پہنچی تھی۔

Subscribe for our email updates…

Email

Raah Tv Live

About Raah TV

Raah TV is a Pakistani infotainment web channel with a vision to promote positivity, optimism and hope.