اسلامی فلاحی ریاست یا سیکولر پاکستان

:(شکیل خان (سوال
کیا قائد اعظم سیکولر پاکستان چاہتے تھے؟
:(مقصود یوسفی (جواب
نہیں، قائد اعظم اس معاملے میں بالکل واضح تھے اور انہوں نے مسلمانوں کے لیے ایک ایسی سرزمین کی جدوجہد کی تھی جہاں اسلامی فلاحی ریاست قائم ہو اور اس معاملے میں انہوں نے کبھی دو عملی کا مظاہرہ نہیں کیا۔
:(شکیل خان (سوال
گیارہ اگست کی تقریر جو ایک مکمل سیکولر آدمی کی تقریر ہے۔
:(مقصود یوسفی (جواب
گیارہ اگست کی جس تقریر کا حوالہ دیا جاتا ہے دلچسپ بات یہ ہے کہ وہ تقریر ہماری قومی اسمبلی کے ریکارڈ میں تو پرنٹڈ پائی جاتی ہے لیکن اس کی آڈیو کیسٹ کہیں نہیں ملتی، قائد اعظم کی تمام تقاریر جو تحریکِ پاکستان کے حوالے سے ہیں ان کی آڈیو کیسٹس موجود ہیں تو اس تقریر کی کیوں نہیں ہے جو لوگ یہ دعوٰی کرتے ہیں کہ یہ تقریر قائدِ اعظم نے گیارہ اگست کو کی تھی تو انہیں اس تقریر کی آڈیو کیسٹ پیش کرنا چاہئے، ہمارے ہاں بڑے بڑے محقق موجود ہیں جو یہ دعوے کرتے ہیں انہیں اس کی آڈیو کیسٹ پیش کرنی چاہئے لیکن نہیں لا سکتے اور جو پرنٹ قومی اسمبلی میں موجود ہے میرے خیال سے اس کو بھی کسی شخص نے لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ہے تو اگر دعوے داروں کے پاس کوئی ثبوت ہے تو اسے پیش کریں تا کہ یہ بات واضح ہو۔
:(شکیل خان (سوال
تو قائد اعظم کیا چاہتے تھے؟
:(مقصود یوسفی (جواب
قائدِ اعظم بالکل واضح انداز میں ایک اسلامی ریاست کے لیے جدوجہد کر رہے تھے کیونکہ اگر وہ ایک اسلامی ریاست کے لیے جدوجہد نہ کر رہے ہوتے تو مولانا عبدالحامد بدایونی، مولانا شبیر احمد عثمانی یہ کبھی ان کے ساتھ نہیں جاتے، یہ زمین مسلمانوں کے لیے حاصل کی گئی تھی اور اگر سیکولر پاکستان بنانا تھا تو کیا سیکولر انڈیا برا تھا؟
میزبان: شکیل خان
(مہمان: مقصود یوسفی (ایڈیٹر روزنامہ نئی بات کراچی)، عطا تبسم (سینئر صحافی

شکیل خان کی بیٹھک اسپیشل 14 اگست 2015

اسلامی فلاحی ریاست یا سیکولر پاکستانشکیل خان (سوال):کیا قائد اعظم سیکولر پاکستان چاہتے تھے؟مقصود یوسفی (جواب): نہیں، قائد اعظم اس معاملے میں بالکل واضح تھے اور انہوں نے مسلمانوں کے لیے ایک ایسی سرزمین کی جدوجہد کی تھی جہاں اسلامی فلاحی ریاست قائم ہو اور اس معاملے میں انہوں نے کبھی دو عملی کا مظاہرہ نہیں کیا۔شکیل خان (سوال): گیارہ اگست کی تقریر جو ایک مکمل سیکولر آدمی کی تقریر ہے۔مقصود یوسفی (جواب):گیارہ اگست کی جس تقریر کا حوالہ دیا جاتا ہے دلچسپ بات یہ ہے کہ وہ تقریر ہماری قومی اسمبلی کے ریکارڈ میں تو پرنٹڈ پائی جاتی ہے لیکن اس کی آڈیو کیسٹ کہیں نہیں ملتی، قائد اعظم کی تمام تقاریر جو تحریکِ پاکستان کے حوالے سے ہیں ان کی آڈیو کیسٹس موجود ہیں تو اس تقریر کی کیوں نہیں ہے جو لوگ یہ دعوٰی کرتے ہیں کہ یہ تقریر قائدِ اعظم نے گیارہ اگست کو کی تھی تو انہیں اس تقریر کی آڈیو کیسٹ پیش کرنا چاہئے، ہمارے ہاں بڑے بڑے محقق موجود ہیں جو یہ دعوے کرتے ہیں انہیں اس کی آڈیو کیسٹ پیش کرنی چاہئے لیکن نہیں لا سکتے اور جو پرنٹ قومی اسمبلی میں موجود ہے میرے خیال سے اس کو بھی کسی شخص نے لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کیا ہے تو اگر دعوے داروں کے پاس کوئی ثبوت ہے تو اسے پیش کریں تا کہ یہ بات واضح ہو۔شکیل خان (سوال):تو قائد اعظم کیا چاہتے تھے؟مقصود یوسفی (جواب):قائدِ اعظم بالکل واضح انداز میں ایک اسلامی ریاست کے لیے جدوجہد کر رہے تھے کیونکہ اگر وہ ایک اسلامی ریاست کے لیے جدوجہد نہ کر رہے ہوتے تو مولانا عبدالحامد بدایونی، مولانا شبیر احمد عثمانی یہ کبھی ان کے ساتھ نہیں جاتے، یہ زمین مسلمانوں کے لیے حاصل کی گئی تھی اور اگر سیکولر پاکستان بنانا تھا تو کیا سیکولر انڈیا برا تھا؟میزبان: شکیل خانمہمان: مقصود یوسفی (ایڈیٹر روزنامہ نئی بات کراچی)، عطا تبسم (سینئر صحافی)شکیل خان کی بیٹھک اسپیشل 14 اگست 2015

Posted by Raah TV on Thursday, August 13, 2015

Subscribe for our email updates…

Email

Raah Tv Live

About Raah TV

Raah TV is a Pakistani infotainment web channel with a vision to promote positivity, optimism and hope.